آزاد کشمیر جنوبی ایشیا کی سلیکون ویلی بنے گی، افتخاز گیلانی

کراچی (اسٹاف رپورٹر) آزاد جموں و کشمیر پاکستان کی وہ پہلی ریاست ہے جو سرکاری اسکولوں میں کوڈنگ اور ٹیکنالوجی کی تعلیم متعارف کروا رہی ہے۔ تفصیلات کے مطابق عالمی تعلیمی کمپنی کوڈڈ مائنڈز اور آزاد جموں و کشمیر حکومت کے درمیان کے درمیان سرکاری اسکولوں میں کوڈنگ اور ٹیکنالوجی کورسز کی تعلیم فراہم کرنے کے لیے ایک معاہدے پر دستخط ہوگئے ہیں، جس کے تحت آزاد جموں و کشمیر کے سرکاری اسکولوں میں موجود 5 لاکھ 50 ہزار جدید تعلیم سے مستفید ہوں گے۔ اس سلسلے میں ایک پروقار تقریب منعقد کی گئی جس سے خطاب کرتے ہوئے آزاد جموں و کشمیر کے وزیر تعلیم بیرسٹر افتخار گیلانی نے کہا کہ ان کا مقصد ریاست کو جنوبی ایشیا کی سلیکون ویلی کے طور پر اوپر لانا ہے. “طلباء کو معیاری تعلیم کی فراہمی ہمارا مشن ہے۔ یہاں شرح تعلیم کا تناسب اچھا ہے۔ ٹیکنالوجی تعلیم سے طلباء کو روزگار کے حصول میں بھی آسانی ہوگی۔” کوڈڈ مائنڈز کے بانی و ایگزیکٹو چیئرمین عمر فاروقی نے کہا کہ پاکستان میں ہر بچے کو زیورِ تعلیم سے آراستہ کرنا چاہتے ہیں۔ اس سلسالے میں صدر آزاد جموں و کشمیر سردار مسعود خان اور حکومت کی جانب سے تعاون پر مشکور ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس معاہدے سے آزاد جموں و کشمیر وادی تعلیم میں تبدیل ہوجائے گی۔ بعدازاں آمنہ خویشگی، سی ای او ساؤتھ ایشا کوڈڈ مائنڈ اور زاہد عباسی سیکریٹری ایلیمنٹری اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن آزاد جموں و کشمیر نے MOU پر دستخط کیے۔ 

Leave a Comment